پاکستان


نہتے اور بیگناہ افرادکےقتل کا ذمہ دار کون؟عدالت نے سانحہ ماڈل ٹائون کی رپورٹ منظر عام پر لانے کا حکم دیدیا

اسلام آباد (مانیٹرنگ ڈیسک)لاہور ہائیکورٹ نے سانحہ ماڈل ٹائون کی رپورٹ منظر عام پر لانے کا حکم، پنجاب حکومت کا فیصلہ چیلنج کرنے کا اعلان۔ تفصیلات کے مطابق لاہور ہائیکورٹ کے جسٹس مظاہر علی اکبر نے سانحہ ماڈل ٹائون کی رپورٹ منظر عام پر لانے کا حکم دے دیا ہے جس پر پنجاب حکومت نے فیصلہ کو چیلنج کرنے کا اعلان کیا ہے۔ عوامی تحریک نے سانحہ ماڈل ٹاؤن کی رپورٹ منظر عام پر لا نے کے لیے لاہور ہائیکورٹ میں درخواست دے رکھی تھی ۔ عوامی تحریک کی درخواست پر لاہور ہائیکورٹ کے جسٹس مظاہر علی اکبر

نے فیصلہ سناتے ہوئے رپورٹ کو منظرعام پر لانے کا حکم دے دیاہے ۔واضح رہے کہ 17جون 2014کو پولیس نے منہاج القرآن کے سربراہ ڈاکٹر طاہر القادری کی رہائش گاہ پر رکاوٹیں ہٹانے کے لیے آپریشن کیا تھا جس میں کارکنان کی مزاحمت کرنے پر پولیس نے ان پر فائرنگ کر دی تھی جس کے نتیجے میں خواتین اور بچوں سمیت متعدد افراد شہید ہو گئے تھے ۔سانحہ کی تحقیقاتی رپورٹ جسٹس باقر نجفی نے تیار کی تھی مگر حکومت نے اسے منظر عام پر لانے سے انکار کر دیا تھا اور اس رپورٹ کی عوام تک رسائی سے گریزاں رہی ہے۔

اوپر